• ایس ایس پی ساؤتھ زبیر نذیر شیخ کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی کیمپ میں موجود ڈرائیور کی کار میں سوار ہونے کے بعد موت ہوگئی۔
  • ایس ایس پی کا کہنا ہے کہ حادثے میں دو پولیس اہلکاروں سمیت تین افراد زخمی ہوگئے۔
  • حادثے کے بعد پولیس نے کار کو گرا دیا ہے۔

جمعرات کے روز کراچی کے ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی کے پڑوس میں اے جی پی کے گھر کے باہر اٹارنی جنرل برائے پاکستان خالد جاوید خان کا ڈرائیور ہلاک ہوگیا۔

حادثے کے بعد سامنے آنے والے اس واقعے کی ایک سی سی ٹی وی فوٹیج سے معلوم ہوا ہے کہ یہ شام 3:52 بجے پیش آیا۔

ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ جب کاروں میں سے ایک کنٹرول سے باہر ہوکر کیمپ میں جاکر گرتی ہے تو دو کاریں ایک دوسرے پر دوڑتی ہیں۔

ایس ایس پی ساؤتھ زبیر نذیر شیخ نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ خیابانِ شہباز پر واقع مکان کے باہر حفاظتی کیمپ میں موجود ڈرائیور کی کار میں سوار ہونے کے بعد موت ہوگئی۔ انہوں نے مزید کہا کہ حادثے میں دو پولیس اہلکاروں سمیت تین دیگر افراد زخمی ہوگئے۔

ایس ایس پی نے بتایا کہ حادثے میں کار چلانے والا شخص بھی زخمی ہوا ہے اور تمام زخمیوں کو نجی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

مزید پڑھ: بیرسٹر خالد جاوید خان نے اٹارنی جنرل آف پاکستان مقرر کیا

شیخ نے بتایا کہ کار کو گرا دیا گیا ہے اور یہ حادثہ تیزرفتاری کے باعث پیش آیا ہے۔

حادثے کے فورا بعد ہی ، اے جی پی جاوید اسپتال پہنچے اور تصدیق کی کہ اس کے ملازم حادثے میں ہلاک ہوگیا تھا۔





Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published.