ترجمان وزارت خارجہ زاہد حفیظ چوہدری میڈیا بریفنگ سے خطاب کر رہے ہیں۔ – فوٹو بشکریہ ٹویٹر / @ فارن آفسپک

ہفتے کے روز دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان میں افغانستان کے سفیر کی بیٹی سے وابستہ ایک واقعے کے ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کا سراغ لگایا جارہا ہے۔

ترجمان زاہد حفیظ چودھری کے حوالے سے ایف او کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا کہ ، “کل ، ایک کرایہ دار گاڑی پر سوار ہوتے وقت سفیر کی بیٹی پر حملہ کیا گیا۔”

بیان کے مطابق ، پریشان کن واقعہ کی اطلاع ملتے ہی اسلام آباد پولیس نے مکمل تحقیقات کا آغاز کیا۔

بیان میں مزید کہا گیا ، “وزارت خارجہ اور متعلقہ سیکیورٹی حکام سفیر اور ان کے اہل خانہ سے قریبی رابطے میں ہیں اور اس معاملے میں مکمل تعاون فراہم کررہے ہیں۔”

اس میں کہا گیا ہے کہ سفیر اور ان کے اہل خانہ کی سلامتی کو “بہتر بنا دیا گیا ہے” اور اسی اثنا میں قانون نافذ کرنے والے ادارے “مجرموں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کے لئے انھیں پکڑنے اور ان کو پکڑنے کی کوشش کر رہے ہیں”۔

“اس بات کا اعادہ کیا جاتا ہے کہ سفارتی مشنوں کے علاوہ سفارتی عملہ اور ان کے اہل خانہ کی حفاظت اور حفاظت انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔

بیان کے آخر میں کہا گیا کہ “اس طرح کے واقعات کو برداشت نہیں کیا جاسکتا اور نہیں کیا جائے گا۔”



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published.