وزیراعظم عمران خان نے موبائل فون ایپلی کیشن لانچ کی ہے۔ نیشنل ڈیٹا بیس اور رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا) کمپیوٹرائزڈ قومی شناختی کارڈ (CNIC) کے درخواست دہندگان کی سہولت کے لیے۔

منگل کو جاری ہونے والے سرکاری بیان کے مطابق ، موبائل ایپ ، پاک آئی ڈی ، اسمارٹ فونز کے کیمرے کا استعمال کرتے ہوئے بائیو میٹرکس اور ڈیجیٹل طور پر دستاویزات کو اسکین کرنے میں مدد دیتی ہے۔

اس میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعظم عمران نے نادرا کے چیئرمین طارق ملک کے موبائل ایپ کے جدید آئیڈیا کو سراہا ہے جو کہ وزیراعظم کے وژن کے اندراج اور ڈیجیٹل پاکستان کے نفاذ کی طرف ایک قدم ہے۔

پاکستان آئی ڈی مینجمنٹ انڈسٹری میں ایک موبائل ایپ لانچ کرکے ٹریل بلزر بن گیا ہے جس میں بائیومیٹرکس ، فنگر پرنٹس ، چہرے کی شناخت اور اسکین دستاویزات کو شہریوں کے شناختی کارڈ اور دستاویزات کی پروسیسنگ کے لیے درکار ہے۔

اسمارٹ فونز پر ڈیجیٹل ایپ کا استعمال کرتے ہوئے ، تمام شہری بشمول تارکین وطن ڈیجیٹل طور پر فنگر پرنٹس ، تصاویر اور دستاویزات حاصل کر سکیں گے۔

یہ ایک چھلانگ ہے جو نادرا میں شناختی دستاویزات کی پروسیسنگ کے لیے مخصوص آلات یا فزیکل پیپر کے استعمال کے روایتی طریقے کو ختم کرتی ہے۔

چیئرمین نادرا نے کہا کہ یہ جدت پاکستان میں نیشنل آئی ڈی اکو سسٹم میں عوامی سہولت فراہم کر کے انقلاب لائے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس طرح کی ٹیکنالوجی کی جدت کے ڈیجیٹل منافع ریموٹ شناخت اور “E-KYC” پیش کرکے مالیاتی شمولیت ، کاروبار میں آسانی اور ای گورننس کے اقدامات میں مثبت نتائج حاصل کریں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ کاروباری اداروں کے لیے نئے مناظر کھولے گا جس سے وہ صارفین کو تیزی سے آن بورڈ کر سکیں گے اور جدید پاس ورڈ سے کم تصدیق کر سکیں گے۔

چھوٹے کاروبار ، اسٹارٹ اپ اور فن ٹیک تنظیمیں اپنے ڈیجیٹل منافع بھی حاصل کریں گی کیونکہ کرایہ کے متلاشی ختم ہو جائیں گے اور کاروبار چلانے کی لاگت کم ہو جائے گی۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ڈیجیٹل سامان کی پیشکش نوجوان انٹرپرینیورشپ کی حوصلہ افزائی کرے گی اور ای خدمات کو فروغ دے گی۔

یہ ایپ پاک شناخت گوگل پلے سٹور (اینڈرائیڈ) اور ایپل سٹور (آئی او ایس) سے ڈاؤن لوڈ کی جا سکتی ہے۔

.



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *