پشاور: وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی شبلی فراز نے کہا ہے کہ نئی تیار کردہ الیکٹرانک ووٹنگ مشینیں (ای وی ایم) ، جنہیں ترقی میں 90 دن لگتے ہیں ، انتخابی نتائج کو صرف 15 سیکنڈ میں پروسیس کر دیں گی۔

فراز نے کہا ، “روایتی طریقہ کار کے ذریعے گنتی کرکے 1.8 ملین ووٹ ضائع کیے جاتے ہیں لیکن ای وی ایم کے استعمال سے ایک بھی ووٹ ضائع نہیں ہوگا۔”

وزیر نے پشاور کی انجینئرنگ یونیورسٹی میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت اگلے انتخابات میں ووٹوں کی گنتی کے لیے افرادی قوت کے بجائے ٹیکنالوجی کا استعمال کرے گی۔

انہوں نے زور دے کر کہا کہ پاکستان کو بدلتی دنیا کے مطابق ڈھالنا ہے اور ٹیکنالوجی کے استعمال کی طرف بڑھنا ہے کیونکہ یہ ٹیکنالوجی کا دور ہے۔

وفاقی وزیر نے روشنی ڈالی کہ وفاقی حکومت نے انتخابی اصلاحات پر کام کیا ہے جس سے پولنگ کا عمل شفاف اور شفاف ہوگا اور جمہوریت کو فائدہ پہنچے گا۔

اس کے علاوہ فراز نے کہا کہ ای وی ایم ووٹروں کا ریکارڈ رکھے گی اور ووٹروں کی رازداری کے تحفظ کو یقینی بنائے گی۔

فراز نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ اپوزیشن پارٹیاں اپنے ماہرین کو لائیں اور ای وی ایم کی جانچ کریں تاکہ ان کی اطمینان ہو۔

وزیر نے اس بات کو دہرایا کہ ای وی ایم کو ہیک یا چھیڑ چھاڑ نہیں کی جا سکتی کیونکہ وہ کام کرنے کے لیے کوئی انٹرنیٹ کنکشن استعمال نہیں کرتے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *