مزار قائد پر پھولوں کی چادر چڑھائی جا رہی ہے تصویر: فائل۔

پاکستانی قوم پیر کو ملک کی مسلح افواج کو خراج تحسین پیش کرتی ہے ، جنہوں نے مادر وطن کے لیے اپنی جانیں قربان کیں ، کیونکہ اس نے یوم دفاع روایتی جذبے اور جوش و جذبے کے ساتھ منایا۔

6 ستمبر 1965 کو پاکستان کی مسلح افواج نے رات کے وقت ایک بھارتی حملے کو کامیابی سے ناکام بنا دیا۔ پاکستان کی مسلح افواج اور ان کی بہادری نے دشمن کو کامیاب دفاع میں پیچھے دھکیلنے میں مدد کی جس نے پوری قوم کو جنگ کے دوران اپنی فوجوں کو واپس کرنے میں مدد کی۔

اس سال کے یوم دفاع و شہداء کا موضوع “ہمارے شہدا ہمارا فخر ، غازیوں اور شہیدوں سے تعلق رکھنے والے تمام رشتہ داروں کو سلام”

ملک کی سلامتی اور خوشحالی کے لیے فجر کے موقع پر ملک بھر کی مساجد میں خصوصی دعائیں کی گئیں۔ بھارتی افواج کے خلاف مقبوضہ کشمیر کے عوام کی آزادی کے لیے دعائیں بھی کی گئیں۔

مزار قائد پر گارڈ کی تبدیلی کی تقریب بھی منعقد کی گئی جس کے دوران پی اے ایف اصغر خان اکیڈمی کے کیڈٹس نے مزار پر رسمی گارڈ کے فرائض سنبھالے۔

ملک بھر میں شہیدوں کے لیے فاتحہ خوانی اور قرآن خوانی کا بھی انعقاد کیا جا رہا ہے۔

دن کا آغاز اسلام آباد میں 31 اور صوبائی دارالحکومتوں میں 21 توپوں کی سلامی سے ہوا۔

قومی میڈیا قومی گانوں ، شہداء کے لواحقین کے انٹرویوز اور مادر وطن کے محافظوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے خصوصی پروگرام بھی نشر کر رہا ہے۔

یوم دفاع کے موقع پر اپنے پیغام میں صدر علوی نے اس عزم کا اظہار کیا کہ پاکستان اپنی سالمیت پر کبھی سمجھوتہ نہیں کرے گا۔

صدر نے اس اعتماد کا اظہار کیا کہ 6 ستمبر کے جذبے نے پاکستان کو تمام مشکلات کے خلاف مضبوط اور ثابت قدم کھڑا کردیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ “آج ہم فعال طور پر ہمارے خلاف ایک ہائبرڈ جنگ لڑ رہے ہیں۔ میں سیکورٹی ایجنسیوں کی خفیہ سرگرمیوں کو انجام دینے والے دشمن کو بے نقاب کرنے کے لیے ان کی انتھک کوششوں کی تعریف کرتا ہوں”۔

ہم کشمیری عوام کے حق خودارادیت کی جدوجہد میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق کھڑے ہیں۔

علوی نے ان فوجیوں کے خاندانوں کو سلام پیش کیا جنہوں نے ملک کے لیے اپنی جانیں قربان کیں اور کہا کہ وہ ان کے حوصلے اور برداشت کے لیے ان کی تعریف کرتا ہے۔

اس کے علاوہ وزیراعظم عمران خان نے پاک فوج کے بہادر جوانوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ملک کو ہر قسم کی جارحیت سے محفوظ اور محفوظ رکھنے کی کوششوں کو تسلیم کیا۔

انہوں نے کہا ، “اس دن بہادر مسلح افواج کے لیے میرا پیغام یہ ہے کہ ہم نے مل کر پاکستان کے دفاع کو مضبوط اور ناقابل تسخیر بنانے کی جدوجہد میں ایک طویل سفر طے کیا ہے”۔

“آئیے ہم اپنے شہدا اور غازیوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں اور نئے سرے سے عہد کرتے ہیں کہ پاکستان کا دفاع کریں ، اس کی سلامتی اور خودمختاری کی ہر قیمت پر حفاظت کریں۔ پاکستان مسلح افواج زندہ باد۔ پاکستان پائندہ آباد”

دریں اثنا پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ شہداء کی قربانیاں ، فوجیوں کا اٹل عزم اور پاکستانی عوام کا ناقابل تسخیر اتحاد ہماری طاقت اور ہمارے روشن مستقبل کی ضمانت ہے۔ انہوں نے یوم دفاع کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا کہ پیپلز پارٹی کی جدوجہد پاکستان کو مضبوط سے مضبوط تر بنانا ہے۔

بلاول نے کہا کہ یوم دفاع پاکستان کی مناسب تقریب جغرافیہ ، اس کے نظریے اور جمہوریت کی حفاظت ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس یوم دفاع کے موقع پر میں پوری قوم کی جانب سے اپنے شہید ہیروز کے خاندانوں کو مخلصانہ حمایت اور ہمدردی کا یقین دلاتا ہوں۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *