تصویر: فائل
  • پیسکو حکام کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کے ایم پی اے فضل الٰہی نے طاقت کے ذریعہ گرڈ اسٹیشن میں داخل ہوئے اور بجلی کی بحالی کے لئے فیڈروں سے جوڑ توڑ کیا۔
  • پیسکو کا کہنا ہے کہ اس نے الٰہی کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کی درخواست دائر کی ہے لیکن ابھی تک ایف آئی آر درج نہیں کی جاسکی ہے۔
  • پیسکو کا کہنا ہے کہ ایک روز قبل الٰہی لوڈشیڈنگ کے دوران رحمان بابا گرڈ اسٹیشن میں داخل ہوا تھا اور وہاں بھی زبردستی بجلی بحال کردی تھی۔

پشاور الیکٹرک سپلائی کمپنی (پیسکو) نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے ایک رکن صوبائی اسمبلی کے خلاف درخواست دائر کی ہے جس میں “زبردستی گرڈ اسٹیشن میں داخل ہوکر بجلی بحال کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔”

پیسکو حکام نے پشاور کے بھانہ ماڑی پولیس اسٹیشن میں پہلی انفارمیشن رپورٹ (ایف آئی آر) درج کرنے کی درخواست کی ، جس میں یہ الزام لگایا گیا ہے کہ ایم پی اے فضل الٰہی نے گرڈ اسٹیشن میں داخل ہوکر رہائشی فیڈر کا بوجھ خود کمرشل فیڈر میں منتقل کردیا۔

درخواست کے مطابق ، ایم پی اے نے 400 افراد کے ہمراہ لوڈشیڈنگ کے خلاف احتجاج کرنے کے لئے رنگ روڈ بلاک کردیا اور دیگر لوگوں کے ساتھ بجلی کی زبردستی بحالی کے لئے گرڈ اسٹیشن میں داخل ہوئے۔ درخواست میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ الٰہی نے پیسکو کے خلاف علاقہ مکینوں کو “برین واش” کیا۔

پیسکو نے درخواست میں الہٰی اور گرڈ اسٹیشن میں داخل ہونے والے 25 دیگر افراد کے خلاف بھی مقدمہ درج کرنے کی درخواست کی ہے۔

فی پیسکو عہدیداروں نے درخواست داخل کرنے کے باوجود الٰہی کے خلاف ابھی تک ایف آئی آر درج نہیں کی ہے۔

ایک دن قبل ، الٰہی نے لوڈشیڈنگ کے دوران رحمان بابا گرڈ اسٹیشن میں داخل ہوکر وہاں بھی زبردستی بجلی بحال کردی تھی۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *