• حکومت پنجاب کے ذریعہ اب ٹرانسجینڈر افراد کو وظیفہ ادا کیا جائے گا۔
  • وزیراعلیٰ پنجاب کے معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے پنجاب سوشل پروٹیکشن اتھارٹی کے تحت ٹرانسجینڈر افراد کے لئے نئے پروگرام کی تفصیلات شیئر کیں۔
  • ڈاکٹر اعوان کا کہنا ہے کہ آنے والی حکومت اپنے تمام منصوبوں میں معاشرے کے کم مراعات یافتہ طبقے کو ترجیح دے رہی ہے۔

لاہور: پنجاب حکومت اپنے سماجی تحفظ اتھارٹی کے ذریعہ ایک نئے پروگرام کے تحت ٹرانسجینڈر افراد کو ماہانہ وظیفہ ادا کرے گی۔

اس کا اعلان وزیر اعلی پنجاب کے معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے لاہور میں پنجاب سوشل پروٹیکشن اتھارٹی کے وائس چیئرپرسن جمال ناصر چیمہ سے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ٹرانس جینڈر افراد معاشرے کا ایک حصہ ہیں اور انہیں ماہانہ وظیفہ دیا جائے گا۔

ڈاکٹر فردوس نے کہا کہ ‘احسان پنجاب مساوات پروگرام’ ایک انوکھا پروگرام تھا جس کے تحت ٹرانسجینڈر لوگوں کی سہولت فراہم کی جارہی ہے۔

مزید پڑھ: بنگلہ دیشی ٹی وی چینل نے ملک کا پہلا ٹرانسجینڈر نیوز اینکر کی خدمات حاصل کیں

ایس اے سی ایم نے بتایا کہ اس پروگرام کے تحت ، 18 سے 40 سال کی عمر کے معذور ٹرانسجینڈر افراد کو 2،000 روپے ماہانہ دیئے جارہے ہیں ، جبکہ 40 سال سے زائد عمر کے ٹرانس جینڈر افراد کو ماہانہ 3000 روپے دیئے جارہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت اپنے تمام منصوبوں میں معاشرے کے کم مراعات یافتہ طبقے کو فوقیت دے رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ سی ایم عثمان بزدار نے بھکر میں 9 ارب روپے کے پیکیج کا اعلان کیا اور بھکر کے عوام کو ترقی کے دھارے میں شامل کیا۔

.



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *