• سندھ حکومت ٹاسفورس نے ہوٹلوں ، ریستورانوں اور کیفوں کو بیرونی کھانا دوبارہ شروع کرنے کی اجازت دینے کی سفارش کی ہے۔
  • سندھ حکومت رات 8 بجے تک دکانیں ، مارکیٹیں اور دیگر کاروبار کھولنے کی اجازت دے سکتی ہے۔
  • کورونا وائرس پر سندھ ٹاسک فورس نے سکولوں کو 10 دن کے لیے بند کرنے کی سفارش کی ہے۔

کراچی: سندھ حکومت کی کورونا وائرس ٹاسک فورس اسکولوں کو دوبارہ کھولنے اور کورونا وائرس کے کیسز میں اضافے کی وجہ سے عائد پابندیاں اٹھانے کے بارے میں حتمی فیصلہ آج (اتوار) کرے گی۔

ایک دن پہلے ، نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے اعلان کیا تھا کہ سندھ حکومت 9 اگست کو لاک ڈاؤن کو ختم کرے گی۔

تاہم اس حوالے سے حتمی فیصلہ صوبائی حکومت کی ٹاسک فورس آج کرے گی۔

ذرائع نے بتایا کہ ٹاسک فورس نے سفارش کی ہے کہ ہوٹلوں ، ریستورانوں اور کیفوں کو بیرونی کھانا دوبارہ شروع کرنے کی اجازت دی جائے جبکہ دکانیں ، بازار اور دیگر کاروبار 9 اگست سے رات 8 بجے تک کھلے رہیں۔

یہ بھی سفارش کی گئی ہے کہ بیرونی شادی کے فنکشنز پر سے پابندی ہٹا دی جائے اور سکول مزید 10 دن کے لیے بند رہیں۔

پاکستان میں اتوار کو کورونا وائرس کی مثبت شرح 8 فیصد سے زیادہ بتائی گئی ، کیونکہ ملک بھر میں کورونا وائرس کے کیسز میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔

این سی او سی نے رپورٹ کیا کہ ہفتے کے روز 55002 میں سے 4،455 افراد نے وائرس کے لیے مثبت ٹیسٹ کیے جن کا انفیکشن کے لیے ٹیسٹ کیا گیا۔

یہ کورونا وائرس مثبتیت کا تناسب 8.09 فیصد پر لاتا ہے۔ این سی او سی کے اعداد و شمار کے مطابق ، گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 68 افراد وائرس سے ہلاک ہوئے۔

پاکستان میں اس وقت 82،076 فعال کورونا وائرس کیسز ہیں جبکہ ملک میں کیسز کی کل تعداد 1،067،580 ہے۔

وائرس کی وجہ سے اموات کی کل تعداد 23،865 سے تجاوز کر گئی ہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published.