کراچی (اسٹاف رپورٹر) حکومت سندھ نے اتوار کے روز کورون وائرس کو انفیکشن کے خلاف ویکسینیشن پھیلانے اور اس کی حوصلہ افزائی سے روکنے کے لئے تازہ اقدامات کا اعلان کیا ہے۔

وزارت داخلہ سندھ نے حکومت کو ہدایات جاری کیں کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ صرف حفاظتی ٹیکوں والے افراد کو مسافر بسوں کے ذریعے سفر کرنے ، ہوٹلوں میں چیک کرنے ، ریستورانوں میں کھانے پینے اور بیرونی شادیوں کے پروگراموں میں شرکت کی اجازت دی جائے۔

“عید الاضحی کے دوران ممکنہ طور پر نقل و حرکت / سرگرمیوں کے درمیان؛ ڈویژنل / ضلعی انتظامیہ کی ایس او پیز کی تعمیل کے لئے خصوصی توجہ بھی درج ذیل علاقوں پر مرکوز ہوگی:”

  • جدید ذرائع سے ماسک پہننے کی تعمیل
  • سیاحت کا شعبہ۔ صرف حفاظتی ٹیکے لگنے والے افراد کو ہی سیاحوں کے مقامات / علاقوں میں جانے کی اجازت ہوگی
  • ٹرانسپورٹ سیکٹر (بس اڈاس / ریلوے اسٹیشن)
  • ہوٹل / ریستوراں / کیفے (انڈور / آؤٹ ڈور)
  • شادی (بیرونی)
  • مویشیوں کے بازار
  • تفریحی پارک
  • عوامی پارکس

اطلاع کے مطابق یہ اقدامات 25 جولائی تک برقرار رہیں گے۔

گذشتہ ایک ہفتہ کے دوران پاکستان میں کورونا وائرس کے معاملات میں مستقل اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے ، کورونا وائرس میں مثبت تناسب 5 bar رکاوٹ کی خلاف ورزی ہے اور ملک میں بھی 2500 سے زیادہ معاملات کی اطلاع دی جارہی ہے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر (این سی او سی) نے پابندیوں کا تازہ ترین اعلان کرنے کے ساتھ ہی پاکستان میں حکام نے خبردار کیا ہے کہ ملک میں اس بیماری کی چوتھی لہر جاری ہے۔

کراچی کے ضلع کورنگی میں اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ ہے

ڈیلی جنگ کی ایک رپورٹ کے مطابق ، کورنگی ضلع کی رفاہِ عام سوسائٹی ، شاہ فیصل کالونی اور گلزار کالونی علاقوں میں سمارٹ لاک ڈاؤن نافذ کردیا گیا ہے۔

سمارٹ لاک ڈاؤن ضلع میں 31 جولائی تک نافذ ہے۔

دوسری جانب شہر کے ڈپٹی کمشنر کی ہدایت کے مطابق آج (اتوار) کو لاہور میں تمام بازار بند رہیں گے۔

گذشتہ ایک ہفتہ کے دوران پاکستان میں کورونا وائرس کے معاملات میں مستقل اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے ، کورونا وائرس میں مثبت تناسب 5 bar رکاوٹ کی خلاف ورزی ہے اور ملک میں بھی 2500 سے زیادہ معاملات کی اطلاع دی جارہی ہے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر (این سی او سی) نے پابندیوں کا تازہ ترین اعلان کرنے کے ساتھ ہی پاکستان میں حکام نے خبردار کیا ہے کہ ملک میں اس بیماری کی چوتھی لہر جاری ہے۔

.



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *