8 ستمبر 2020 کو وزیر اعظم عمران خان اسلام آباد میں وفاقی کابینہ کے اجلاس کی صدارت کر رہے ہیں۔ – پی آئی ڈی / فائل
  • ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے کل 12 بجے وفاقی کابینہ کا اجلاس طلب کرلیا۔
  • اجلاس میں ایجنڈا کے 22 آئٹمز کو جان بوجھ کر پیش کیا جائے گا۔
  • کابینہ حلیم عادل شیخ کی جے آئی ٹی تشکیل دینے کی درخواست پر نظرثانی کرے گی۔

پیر کو وفاقی کابینہ کے اجلاس میں مسلح افواج کے افسران اور جوانوں کی بنیادی تنخواہوں کے 15 فیصد مالیت کے خصوصی الاؤنس کا جائزہ لیا جائے گا ، اس معاملے سے واقف ذرائع نے پیر کو بتایا۔

ذرائع کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے 22 سے زائد ایجنڈا آئٹموں پر دانستہ طور پر کابینہ کا اجلاس کل (منگل) طلب کیا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ کابینہ کو نوشہرہ میں ریلوے اراضی پر کثیر المنزلہ عمارت کی تعمیر ، اسلام آباد کے سیکٹر ای 8 اور ای 9 میں تجاوزات ، اور زرعی اور غیر زراعت منصوبوں کے اندراج کے بارے میں بریفنگ دی جائے گی۔

ذرائع نے مزید کہا کہ کابینہ سندھ اسمبلی میں پی ٹی آئی کے رہنما اور اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ کیخلاف مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) تشکیل دینے کی درخواست کا جائزہ لے گی اور اس رپورٹ کو بھی ختم کرے گی جو اس کے سامنے ممنوعہ تنظیم تحریک ای پر پیش کی جائے گی۔ -لابائیک پاکستان۔

ذرائع کے مطابق ، اقبال اکیڈمی پاکستان کے لئے پانچ ممبروں کی خدمات حاصل کرنے کی منظوری ، دوائیوں کی خوردہ قیمت کے لئے بالائی حد مقرر کرنا اور اسلام آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی کے سی ای او کی تقرری بھی ایجنڈے میں شامل ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ ایم ڈی نیشنل انجینئرنگ سروس کی تقرری اور تین ماہ کی مدت میں توسیع کی منظوری دی جائے گی۔

پاکستان ریلوے فریٹ ٹرانسپورٹیشن کمپنی کے سی ای او کی تقرری اور نجکاری سے متعلق کابینہ کمیٹی اور توانائی سے متعلق کابینہ کمیٹی کے فیصلوں کی توثیق بھی ایجنڈے میں شامل ہے۔

یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ وفاقی وزارت خزانہ نے وفاقی کابینہ کو سمری ارسال کی ہے جس میں مسلح افواج کے افسران اور جوانوں کی بنیادی تنخواہوں کا 15 فیصد مالیت کے خصوصی الاؤنس کی تجویز کی گئی ہے۔

وزارت نے خصوصی الاؤنس کے لئے وزیر اعظم عمران خان سے منظوری طلب کی تھی لیکن وزیر اعظم نے اس معاملے کو کابینہ کے پاس اٹھانے کی ہدایت کی۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published.